160

ڈاکٹر ذاکر نائیک کو ہندوستان کو دیں گے یا نہیں ۔۔۔؟ مہاتیر محمد نے بڑا اعلان کر دیا

کوالالمپور(ویب ڈیسک)ملائیشیاکے وزیر اعظم مہاتیر محمد نے کہا ہے کہ متنازع اسلامی اسکالر ڈاکٹر ذاکر نائیک کو ہندوستان کے حوالے نہیں کیا جائے گا۔میڈیا رپورٹس کے مطابق ہندوستان کی حکومت نے جنوری میں ذاکر نائیک کی حوالگی کیلئے کہا تھا۔ ایک پریس کانفرنس کے درمیان مہاتیر محمد نے کہا کہ جب تک

ذاکر نائیک ہمارے ملک میں ہیں ان کو کوئی پریشانی نہیں ہے ، ہم انہیں ہندوستان واپس نہیں بھیجیں گے ، کیونکہ نائیک کو ملائیشیا کی شہریت ملی ہوئی ہے۔خیال رہے کہ ذاکر نائیک نے 2016 میں ہندوستان چھوڑ دیا تھا۔ ان کے خلاف این آئی اے اور ای ڈی جانچ کررہی ہے۔ ان کے خلاف ٹیرر فنڈنگ ، متنازع تقریر اور منی لانڈرنگ سمیت کئی سنگین الزامات ہیں۔ جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق ملائیشیا نے کہاہے کہ وہ ڈاکٹر ذاکر نائک کو ہندوستان کے حوالے کرے گا۔نائب وزیر اعظم احمد زاہد حمیدی نے کہا ہے کہ ہندوستانی حکومت کی طرف سے ذاکر نائک کو حوالے کرنے کا کوئی مطالبہ نہیں ہوا تاہم اگر مطالبہ کیا گیا تو ملائیشیا انہیں ضرور حوالے کرے گا۔واضح رہے کہ گزشتہ ہفتہ ملائیشین حکام نے کہا تھا کہ وہ ڈاکٹر ذاکر نائک کو ہندوستان کے حوالے نہیں کیا جائے گاتاہم تفتیش میں وہ ہندحکومت کے ساتھ بھر پور تعاون کے لئے تیار ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ملائیشیا حکومت ہندوستان کے ساتھ تعلقات میں خرابی نہیں چاہتی۔ حکومت کو توقع ہے کہ آئندہ دنوں میں حکومت ہند یا انٹرپول کے ذریعہ ڈاکٹر ذاکر نائک کو حوالے کرنے کا مطالبہ کیا جائے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں