101

بہت خوب۔۔۔ وزیراعظم کے قبل از وقت الیکشن کے بیان پر نواز شریف کے رد عمل نے سب کو حیران کر دیا

اسلام آباد (ویب ڈیسک) وزیراعظم عمران خان نے صحافیوں کو دئیے گئے انٹرویو میں قبل از وقت الیکشن کی بات کی تھی۔اس پر جہاں سیاسی مبصرین اور اپوزیشن کی طرف سے رائے آنے کا سلسلہ جاری ہے وہیں سابق وزیراعظم نواز شریف نے بھی عمران خان کے اس بیان پر رد عمل دیا ہے۔میڈیا رپورٹس کے مطابق نواز شریف کا کہنا ہے کہ،

عوام وزیراعظم کی طرف سے قبل از وقت الیکشن کی بات سن کر خوش ہوئی ہو گی ۔عوام سوچ رہی ہو گی کہ اچھا ہے جتنی جلدی ہو ان سے جان چھوٹ جائے گی۔انہوں نے مزید کہا کہ عمران خان سے متعلق میں کیا کہوں وہ جو کر رہے ہیں وی دنیا دیکھ رہی ہے۔انہوں نے انتخابات میں دھاندلی سے متعلق گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ فافن کی رپورٹ میں 53 حلقوں میں مسترد شدہ ووٹوں کی تعداد لیڈ سے زیادہ ہے تاریخ میں کبھی ایسا دیکھنے میں نہیں آیا۔نواز شریف نے کہا کہ اگر قبل از وقت الیکشن ہوتے ہیں تو مسلم لیگ ن اس کے لیے تیار ہے۔نواز شریف کا مزید کہنا تھا کہ ہم سنجیدہ سیاست کے قائل ہیں۔انہوں نے کہا کہ بجلی کے منصوبوں پر 160 ارب روپے بچائے کسی نے شاباش نہیں دی۔واضح رہے وزیراعظم عمران خان نے صحافیوں کو انٹرویو دیا ویسے تو اس انٹرویو سے وزیراعظم کی کی جانے والی کئی باتیں زیر بحث ہیں تاہم ایک بات جو سب سے زیادہ زیر بحث ہےوہ یہ کہ عمران خان نے کہا کہ ملک میں قبل از وقت الیکشن ہو سکتے ہیں۔وزیراعظم کے اس حیران کن بیان پر تجزیہ نگاروں کی رائے آنے کا سلسلہ بھی جاری ہے ۔اسی متعلق گفتگو کرتے ہوئے معروف صحافی معید پیرزادہ کا کہنا ہے کہ وزیراعظم عمران خان کی عادت ہے کہ وہ احتیاط سے بات نہیں کرتے،عمران خانبہت کھل کر اور زیادہ بات کرتے ہیں۔ حالانکہ دنیا بھر میں وزیر اعظم کے عہدے پر رہنے والے لیڈر جملے بہت احتیاط سے بولتے ہیں۔لیکن چونکہ عمران خان میں اس قسم کی احتیاط نہیں ہے تو جب عمران خان کی حکومت کے اتحادیوں اور اپوزیشن کی بات ہو رہی تو عمران خان نے صرف ایک جملہ کسا اور ہم میں سے موجود وہاں کسی شخص کو یہ نہیں لگا کہ عمران خان نے کوئی سیریس بات کی ہے۔ معید پیرزادہ کا کہنا تھا کہ عمران خان نے اپوزیشن اور میڈیا کو سب سے زیادہ تبصرہ کرنے والی بات دے دی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں